گردےکی پتھری اور اس کے آسان علاج

 

گردےکی پتھری

گردے اور پتے میں پتھری کا بننا ایک عام مرض ہے

علامت

پتھری اگر گردے میں ہو تو کمر کے پچھلے حصے میں شدید درد ہوتا ہے۔

اس کی وجہ سے انفیکشن اور بلڈ پریشر بھی بڑھ سکتا ہے۔

اگر وہ پتھری گردے اور مثانے کی طرف نالی میں آجائے تو یہ درد پیٹ کے اگلے حصے کی طرف محسوس ہوتا اور پیشاب کی نالی میں درد ہو سکتا ہے

پیشاب کے معمولات میں تبدیلی ہونے لگتی ہے مثلا پیشاب میں خون آنے لگے،پیشاب کرنے میں تکلیف ہو،پیشاب میں بلبلے ہوں،رات کو سوتے میں پیشاب نکل جائے یا اس کی رنگت ہی تبدیل ہوجائے۔

پیشاب نہ آنے کی وجہ سے فاسد مادے جسم کے اندر رہ جاتے ہیں اور یہ جسم کے مختلف حصوں پر سوزش کی صورت میں ظاہر ہوتے ہیں۔

گردوں میں خرابی کی وجہ سے ہارمون صحیح طرح پیدا نہیں ہوتااور جسم خون کی کمی کا شکار ہونے لگتا ہے۔اس کمی کی وجہ سے جسم تکان اور کمزوری کا شکار ہوجاتا ہے

گردےکی پتھری کے چند آزمودہ طریقے

انجیرکا استمعال۔

انجیرکےمسلسل استعمال سے پتھری حل ہوکر نکل سکتی ہے اس کے لیے انجیر کے تازہ یا ٹن پیک پانچ دانے صبح نہار منہ استعمال کریں۔اس سے آگزیلیٹ اور یوریٹس کی پتھری ریت بنکرخارج ہو سکتی ہے

 

 

سبز سیب۔


سبز سیب کے فریش جوس سے بھی پتھری نکلنے کے شواہد موجود ہیں.سبز سیب کا جوس نہار منہ پینے سے پتھری  آسانی سے نکلتی ہے.                   .                               .                 .                                               .                                                                            .                                               .          .                        .

                  .                                                                                                .

 

طبی طریقہ۔

اگر مثانہ میں پتھری رک جائے اور تکلیف زیادہ ہورہی ہو تو مریض کو سینے کے بل لیٹا کراسے کہیں کہ وہ اپنے پاؤں اوپرآسمان کی طرف اٹھائے اوراُس کی پیڑو کی ہڈی پر گرم پانی ڈالیں اور نیچے سے اوپر کو ملیں تو اس طرح مریض کو پیشاب کُھل کر آئے گا

 

 

 

 

لائف سٹائل۔

لائف سٹائل بدلنے سے پتھریاں بننے کے امکانات اور خطرات کم ہو جاتے ہیں مثلاً پانی زیادہ پینا، ڈی ہائیڈریٹ ہونے سے بچنا، تازہ پھلوں کا زیادہ استعمال، خشک فروٹ کم لینا، تُرش پھل یعنی لیموں، سنگترہ، مالٹے وغیرہ کا زیادہ استعمال                                                                               .                              .

 

 

 

سبزیوں کا زیادہ استعمال۔

 

سبزیوں کا زیادہ استعمال پتھری سے بچاتا ہے لیکن جن لوگوں میں آگزلیسٹ کی پتھریاں بنتی ہیں وہ ایسی سبزیاں نہ کھائیں جن میں یہ عنصر پایا جاتا ہے۔کیلشیم جسم کی ضرورت ہے۔                                                            ۔

دودھ کا استمعال۔


 روزانہ کم از کم ایک پائو دودھ ضرور پینا ۔ نمکین چیزیں کم سے کم کھانی چاہئیں۔ کیلشیم اور سوڈیم کا بیلنس رکھنا بہت ضروری ہے یہ بہت فائدہ مند ہے۔                                        ۔                                       ۔                                                          ۔                      ۔

 

 

 

لال لوبیہ

لال لوبیہ کا استمعال بہت فائدہ مند ہے لال لوبیہ کو صاف پانی میں 6 گھنٹے ابال کر  باریک کپڑے  چھان کر  پی لیں ۔یہ مائع گردے پتھر کے درد کو کم  کرتا ہے 

Leave A Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Content

Name

Website

Phone